پی ڈی ایم کا ضمنی انتخابات اکٹھے لڑنے کا اعلان

پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) سربراہ فضل الرحمان نے ضمنی انتخاب متحد ہوکر لڑنے کا اعلان کردیا۔ کہتے ہیں عمران خان جس دلدل میں دھکیل گئے اس سے 4 ماہ میں نکلا نہیں جاسکتا، اداروں سے نہیں اداروں میں موجود افراد سے شکایت ہے، کیا یہ ضروری ہے کہ عمران خان سے متعلق کیس ایک ہی بنچ سنے، جس کابینہ میں امریکی شہریت رکھنے والے لوگ تھے وہ ہمیں آزادی کا کہتے ہیں۔

پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے پی ڈی ایم اور جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تحریک انصاف جیسی باطل پارٹی کے خلاف اگر اکیلے بھی لڑنا پڑا تو لڑوں گا، سیاسی، آئینی جنگ لڑنی ہے، ہتھیار نہیں ڈالیں گے، عمران خان کو بین الاقوامی طاقت کے ذریعے لایا گیا تھا، سیاسی جماعتوں کے اپنے منشور ہوتے ہیں، فیصلہ عوام نے کرنا ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ رجیم چینج کون ہے، کس کیخلاف سازش ہوئی، عالمی سازش کرکے عمران خان کو نہیں نکالا گیا، ایک دو دہائیوں سے نظریاتی جنگ کے بجائے تہذیب کی جنگ ہورہی ہے، نوجوانوں میں تہذیب، اخلاقیات کو ختم کیا جارہا ہے، نوجوانوں کو بد اخلاقی سکھائی جارہی ہے، سازش کے تحت معاشرے کو تباہ کیا جارہا ہے۔

سربراہ پی ڈی ایم کا کہنا ہے کہ اداروں سے نہیں اداروں میں موجود افراد سے شکایت ہے، عدلیہ ریاست کا اہم ادارہ ہے، اس کا احترام ہم پر فرض ہے، جب جج اپنے رویے سے متنازع بن جائے اور ایک فریق کو سہولت دیں تو ریاست تباہ ہوجاتی ہے، کوئی جتنا بھی طاقتور، کسی بھی ادارے میں ہے، ہم کسی سے خوفزدہ نہیں، ضمنی الیکشن آئیں گے تو ہم ایک پارٹی کی طرح لڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ سوشل میڈیا سے مقبولیت کا اندازہ نہیں ہوتا، اس فتنے سے نوجوان نسل کو بچانا ہے، اداروں کو استعمال کرکے ہمارے خلاف کیسز بنائے گئے، اگر ہمارے خلاف اداروں نے کیسز بنائے تو ہم وہ فائلز ان کے منہ پر مار دیں گے۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اس وقت حکومتی اتحاد موجود ہے، پی ڈی ایم میں شامل جماعتیں ضمنی انتخابات میں اکٹھا الیکشن لڑیں گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.