مولانا فضل الرحمان کی وزیراعظم سے ملاقات، سودی نظام کے خاتمے پر گفتگو

وزیراعظم شہباز شریف سے مولانا فضل الرحمان نے ملاقات کی جس میں سود سے متعلق عدالتی فیصلے کیخلاف نیشنل بینک کی اپیل پر تبادلۂ خیال کیا گیا۔ جمعیت علماءِ اسلام (ف) کے سربراہ نے قومی بینک کی اپیل پر تحفظات کا اظہار کیا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ امت مسلمہ سود کو ملک میں معاشی نظام کی تباہی کا سبب سمجھتی ہے، عدالتی فیصلے کیخلاف بینکوں کی اپیل سے امت مسلمہ کے دل رنجیدہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: سود سے متعلق وفاقی شرعی عدالت کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج

ترجمان جے یو آئی کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے نیشنل بینک کی سود سے متعلق عدالتی فیصلے کیخلاف اپیل واپس لینے کی یقین دہانی کرادی جبکہ ٹاسک فورس کو اس حوالے سے اقدامات کا حکم بھی دیدیا۔

واضح رہے کہ شرعی عدالت نے ملک سے سودی نظام کے خاتمے کا حکم دیا تھا۔

فیصلے میں وفاقی شرعی عدالت نے سودی قوانین میں 31 دسمبر 2022ء تک ترامیم کی ہدایت کرتے ہوئے ملک کو 31 دسمبر 2027ء تک ربا فری بنانے کا حکم دیا ہے۔

مزید جانیے: قومی اسمبلی میں سود کیخلاف فیصلے کے خیرمقدم کیلئے قرارداد منظور

قومی اسمبلی میں وفاقی شرعی عدالت کی جانب سے سود کیخلاف دیئے گئے فیصلے کے خیرمقدم کیلئے قرارداد منظور کی تھی۔

اس سے قبل اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے وفاقی شرعی عدالت کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا، سلمان اکرم راجہ کے توسط سے دائر اپیل میں وزارت خزانہ، قانون، چیئرمین بینکنگ کونسل اور دیگر کو فریق بنایا گیا تھا جبکہ 4 نجی بینکوں نے بھی شرعی عدالت کے فیصلے کیخلاف اپیل کی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.