اوپن مارکیٹ میں ڈالر 195 روپے کا ہوگیا thumbnail

اوپن مارکیٹ میں ڈالر 195 روپے کا ہوگیا

روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں روز گراوٹ دیکھی جارہی ہے اور اوپن مارکیٹ میں ایک ڈالر 195 روپے کی سطح پر پہنچ گیا ہے۔

کاروباری ہفتے کے آخری روز بھی منی مارکیٹ میں پاکستانی کرنسی کی قدر میں مسلسل گراوٹ کا سلسلہ جاری ہے۔
جمعے کے روز اوپن مارکیٹ میں روپے کی قدر میں مزید ایک روپے23 پیسے کمی دیکھی گئی ہے ، جس کے بعد ڈالر کی قدر ملکی تاریخ میں پہلی بار 195 روپے ہوگئی ہے۔

دوسری جانب انٹر بینک میں بھی ڈالر 193روپے سے تجاوز کرگیا ہے۔

ایکس چینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری ظفر پراچہ کے مطابق  غیر قانونی منی چینجرز 200 روپے میں ڈالر فروخت کررہے ہیں.

کرنسی ڈیلرز کا کہنا ہے کہ حکومت کو روپے کی قدر میں گراوٹ کو روکنے کے لیے فوری اقدامات کرنےچاہیے نہیں تو اس کے ملکی معیشت پر خطرناک اثرات مرتب ہوں گے.

ماہرین کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف سے معاملات بہتر ہونے تک روپے کی کرنسی میں کمی کا سلسلہ جاری رہے گا۔

گزشتہ روز عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور سابق وفاقی وزیر شیخ رشید احمد نے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ 17 مئی تک ڈالر 200 روپے کا ہوسکتا ہے۔

سابق وزیر داخلہ نے کہا تھا کہ ملک میں اس وقت 2 وزیر اعظم اور 2 وزیر خزانہ کام کررہے ہیں، یہ لوگ ملک کو سنبھال نہیں سکتے، زرمبادلہ کے ذخائر آدھے ہوچکے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.