کوئٹہ میں سریاب روڈ پر دھماکا thumbnail

کوئٹہ میں سریاب روڈ پر دھماکا

کوئٹہ میں سریاب روڈ پر دھماکے میں 2 ایف سی اہل کار زخمی ہوگئے۔

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں 7 فروری بروز پیر سڑک کنارے نصب بم دھماکے میں فرنٹیئر کور ( ایف سی) کے 2 اہل کار زخمی ہوگئے۔

دھماکا خیز مواد سریاب روڈ کھڑی موٹر سائیکل میں نصب کیا گیا تھا، جس سے قریب سے گزرنے والی ایف سی کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔

جائے وقوع پر میڈیا سے گفتگو میں ڈی آئی جی انویسٹی گیشن نوید عالم نے بتایا کہ دہشت گردوں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ٹارگٹ کیا، دھماکا ریموٹ کنٹرول ڈیوائس سے کیا گیا تھا۔ ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کا مزید کہنا تھا کہ دھماکے میں 3 کلو بارودی مواد استعمال ہوا، جس میں بال بیئرنگ بھی شامل تھے۔

دھماکے سے ایف سی کی گاڑی کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ بارودی مواد کے دھماکے میں زخمی ہونے والے اہل کاروں کو فوری طبی امداد کیلئے بولان میڈیکل کمپلیکس منتقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر سے بلوچستان میں سیکیورٹی فورسز اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں پر دہشت گردوں کے حملوں میں تیزی آئی ہے۔

بلوچستان کے اندر بلوچ علیحدگی پسندوں کے حملوں میں شدت آرہی ہے اور سمجھا جارہا ہے کہ یہ تنظیم اپنی کارروائیوں کے ذریعے نہ صرف سیکیورٹی فورسز کو بلکہ پاکستان اور چین کے اشتراک سے چلنے والے منصوبوں کو بھی اپنا اہم ہدف سمجھتی ہے۔

بلوچ عسکریت پسندوں کے بارے میں بھی پاکستان کا مؤقف رہا ہے کہ وہ کارروائیاں کرنے کے بعد سرحد پار چلے جاتے ہیں اور اکثر اوقات افغانستان یا ایران میں روپوش ہو جاتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.